پاکستان سے شکست کے دکھ سے ریٹائر ہوا

دبئی : یو اے ای میں افغانستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اصغر افغان نے اپنی ریٹائرمنٹ کی اصل وجہ بیان کردی ہے ۔

یہاں ایک دلچسپ انٹرویو میں اصغر افغان نے پاکستان سے ہار پر انتہائی دل شکستہ انداز میں کہا کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے دوران ہی ریٹائرمنٹ کا اعلان پاکستان سے ہونے والی شکست کا دکھ ہے جو مجھ سمیت پوری ٹیم نے محسوس کیا اور اس شکست سے ہمارے دل ٹوٹ گئے ہیں ۔

کرکٹر نے کہا ہے کہ پاکستان سے میچ میں ہم بہت زیادہ رنجیدہ ہوئے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ میں نے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کیا ہے ۔

افغانی پلئیر اصغر افغان کا مزید کہنا تھا کہ یہ میرے لیے بہت مشکل فیصلہ ہے مگر اب مجھے ریٹائر ہوہی جانا چاہیے ، میں اب نوجوانوں کو موقع دینا چاہتا ہوں اور یہ ان کے لیے بہترین موقع ہے جب کہ بہت لوگو ں نے مجھ سے اس وقت ریٹائرمنٹ پر مختلف سوالات کیے ہیں مگر میں اس کی وضاحت نہیں کرسکتا ہوں ۔

یہ بات بھی واضح رہے کہ ٹی ٹوئنٹی کے سپر 12 مرحلے میں پاکستان نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد افغانستان کو شکست دی تھی جس میں آصف علی نے ایک اوور میں چار چھکے لگا کر میچ کا پانسہ ہی پلٹ دیا تھا ۔

تینتیس سالہ اصغر افغان نے پاکستان سے شکست کے 24 گھنٹوں کے اندر ہی ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا تھا ، اصغر افغان نے 114 ون ڈے، 75 ٹی ٹوئنٹی اور 6 ٹیسٹ میچ کھیلے جبکہ 115 میچز میں افغانستان کی کپتانی بھی کی ہے جبکہ اصغر افغان کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ ان کی کپتانی میں افغانستان سب سے زیادہ ٹی ٹوئنٹی میچز بھی جیتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

Back to top button