معاہدہ توڑا گیا تو سخت برتاؤ کریں گے

لاہور : سابق مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمان کا اجتماع سے کہنا ہے کہ معاہدے پر عملدرآمد کے تحت جی ٹی روڈ کو جلد خالی کردیں گے لیکن معاہدے میں ہم سے خیانت کی گئی تو بھرپور قوت سے میدان میں واپس آئیں گے ۔

محترم جناب مفتی منیب الرحمان نے وزیر آباد میں دھرنے کے شرکاء سے خطاب میں کہا ہے کہ کالعدم لفظ ہٹنے میں ایک ہفتے کا وقت لگ سکتا ہے ، ہم نے تمام مراحل طے کر رکھے ہیں، اللہ نے آپ کی جماعت کو بہت بڑی فتح سے نوازا ہے ۔

مزید انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ پولیس اورمذہبی جماعت کے شہداء کے بلند درجات کی دعا کرتے ہیں، اسٹیئرنگ کمیٹی کا پہلا اجلاس مکمل ہوچکا ہے ۔

جناب مفتی منیب صاحب کا کہنا تھا کہ معاہدے پرمکمل عملدرآمد ہو گا اور معاہدے پرعملدرآمد کے تحت جی ٹی روڈ کوخالی کردیں گے لیکن معاہدے میں خیانت کی گئی توبھرپور قوت سے میدان میں آئیں گے ۔

چیئرمین سابقہ رویت ہلال کمیٹی نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ مظاہرین کے ساتھ ہیں اور رہیں گے، یہ وقت متحد اورمنظم ہو کر رہنے کا ہے، سراج الحق اورفضل الرحمان نے حمایت کی یقین دہانی کرائی ہے ، جہاں قیادت کہے گی وہاں منتقل ہونا ہے ۔

معاہدہ طے پاجانے کے بعد راولپنڈی میں 12 روز بعد سب بند راستے کھول دیے گئے ہیں جب کہ کالعدم تنظیم ٹی ایل پی کے مظاہرین ابھی تک وزیرآباد میں اللہ والا چوک پر موجود ہیں ۔

اس معاہدہ کی رو سے راولپنڈی سے اسلام آباد جانے والے تمام راستوں سے رکاوٹیں ہٹائی دی گئیں جب کہ مری روڈ سے بھی کنٹینرز ہٹادیے گئے ہیں اور صدر سے فیض آباد تک مری روڈ کو بھی ٹریفک کیلئے بحال کردیا گیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

Back to top button